urdu news about israil and pakistan affair

 urdu news.
آخر اسرائیل کو ایسی کون سی آفت آن پڑی. کہ وہ. پوری دنیا کو چھوڑ کر پاکستان سے ہی ناجائز اسرائیلی ریاست کو ایک
 جائز ریاست تسلیم کروانا چاہتا ہے..؟*

اور ایسا کیوں ہے...؟
کہ پاکستان میں ہونے والے لسانی و فرقہ واریت سے بھرپور ہر فساد کے پیچھے اسرائیل کا ہاتھ ہوتا ہے...؟
.
پاکستان اور اسرائیل دونوں ایسی ریاستیں ہیں جو ایک نظریے پر بنی ہیں۔پاکستان اسلام کے نظریے پر جبکہ اسرائیل یہودیت و صیہونیت کے نظریے پر وجود میں آئی ہیں مگر... یہ دونوں نظریات ایک دوسرے کا الٹ ہیں اور ان کا ٹکراؤ ہمیشہ ہر دور میں رہا ہے
قیام پاکستان کے اوائل میں ہی یہ اعلان کر دیا گیا تھا کہ پاکستان کبھی بھی اسرائیل کی متنازعہ مملکت کو تسلیم نہیں کرے گا.یہ الفاظ.. بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح رحمتہﷲعلیہ کے تھے..

پہلے دن سے ہی اسرائیل پاکستان سے خائف تھا اور پاکستان کا وجود اس کے لئے باعث تسلیم نہیں تھا پاکستان کے پہلے وزیراعظم سر لیاقت علی خان کو ایک بڑی رقم بطور امداد کا لالچ بھی دیا گیا تھا جو اُس وقت اربوں ڈالر مالیت کی رقم بنتی تھی.. لیکن شرط یہ رکھی گئی کہ ایک بار اسرائیل کو ایک جائز ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کریں.. مگر لیاقت علی خان نے اسی وقت بڑی سختی کے ساتھ یہ بات واضح کر دی تھی. کہ پاکستان اسرائیل کو تسلیم کر لے.. ایسا ہونا،، کسی بھی صورت ممکن نہیں ہو سکتا. اور پاکستان کبھی جائز قانونی ریاست تسلیم نہیں کرے گا..
اب یہاں پر یہ سوال اٹھتا ہے.؟
کہ آخر،، اسرائیل کو ایسی کون سی آفت آن پڑی تھی کہ وہ ساری دنیا کو چھوڑ کر پاکستان سے ہی خود کو کیوں تسلیم کروانا چاہتا تھا اور آج تک یہی چاہ رہا ہے......کہ پاکستان اس کو جائز ریاست تسلیم کر لے...
ایسا کیوں ہے..؟
یہ بہت ہی عام سوالات ہیں.
مگر ان کے جواب بہت ہی خاص ہیں........urdu news
محترم اور پیارے پاکستانیوں..!!
پاکستان بننے کے کچھ عرصے بعد ہی اسرائیل کے وزیراعظم ڈیوڈ بن گوریان نے اپنی صیہونی قوم کو مخاطب کر کے کہا تھا.. کہ تمہیں.. عرب قوم اور عرب ممالک سے کبھی کوئی خطرہ نہیں ہوگا،، اگر کسی قوم یا ملک سے اسرائیل کو خطرہ ہے تو وہ پاکستان ہے، اگر اسرائیل کو گریٹر اسرائیل بنانا ہے تو تمہیں پاکستان کے وجود کو ہر حال میں مٹانا ہی ہوگا.......
((بن گوریان کی یہ نصیحت صیہونی یہودیوں نے نسل در نسل پروان چڑھائی ہے اور آج بھی اسی پر کاربند ہیں اور پاکستان کو مٹانے کے لئے نت نئے حربے تلاش کر رہے ہیں.))
سوچنے کی بات یہ ہے کہ. جب آخر اُس وقت ایک غریب پریشانیوں اور مسائل سے دوچار لُٹے پھٹے اِس ملک پاکستان سے اسرائیل کو کیا خطرہ ہو سکتا تھا..........
جبکہ اس وقت ہمارے پاس اُن کے جیسے جدید ہتھیار اور تربیت یافتہ افواج بھی نہیں تھیں اور نہ ہی ایٹم بم کا تصور تھا. مگر عرب ممالک اُس وقت بھی تیل کی دولت سے مالامال تھے اور اسرائیل کو ٹکر دینے کی پوزیشن میں بھی تھے لیکن یہودیوں کی کمال ذہانت اور چالاکی سے عربوں کی حکمرانی میں عیاشی اور فحاشی کا ایسا زہر گھولا گیا کہ وہ اسرائیل کے خلاف بولنا بھی گناہ سمجھنے لگے
عرب ممالک کو یہودیوں کی بین الاقوامی سرمایہ دار کمپنیوں کے ذریعے دولت کی ریل پیل میں ایسا مست کر دیا کہ اب اُن کو،، اِن سب چیزوں سے دوری موت سے کم نہیں لگتی.....
پاکستان کو ہر طرح کا لالچ دے کر آزمانے کے بعد آخرکار 1965 میں ہندستان کے ذریعے پاکستان پر رات کے اندھیرے میں خوں ریز حملہ کر کے باقاعدہ جنگ کا آغاز کر دیا گیا اور ہندوستان کی ہر طرح سے مدد کی...
مگر ﷲ تعالیٰ نے ارضِ پاک کی پاک افواج کو غیبی طاقت کے ذریعے نصرت عطا فرمائی اور الحمد للہ انہوں نے دشمن کو مار بھگایا..
ہمارے ملک کے غدار سیاستدان،، یقیناً بہت عرصہ پہلے ہی اسرائیلی مال و دولت کیلئے دین و ملت کو فروخت کر چکے ہوتے لیکن پاکستانی عوام کی طرف سے آنیوالا شدید ردعمل، اور پاک افواجِ پاکستان کی طرف سے سخت مخالفت کا ڈر،،، ہمیشہ ان غدار سیاستدانوں کو ایسا کرنے سے روکتا رہا. جبکہ ان غداروں کے ارضِ پاک کو اسرائیل اور اس کے دجالی اداروں کا محتاج بنانے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑی
یہ بھی اسرائیلی سازش ہی تھی کہ 1971 میں پاکستان دو لخت ہوگیا، اور مشرقی پاکستان کو بنگلہ دیش بنا دیا گیا
آئی ایم ایف جیسے دجالی اداروں نے اپنے خزانوں کے منہ کھول دئے تا کہ ہمارے غدار سیاستدان و حکمران کھل کر پاکستان کے خلاف مال اکٹھا کر سکیں اور آخر میں پاکستان کو کمزور اور لاغر بنا کر پاکستانی عوام کو اپنا محتاج کر لیا جائے...
ہم لوگ یقیناً،، ہمارے نبی کریم صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم کی احادیث مبارکہ کو اس قدر غور سے نہیں پڑھ سکے، جتنا غور سے یہودیوں نے پڑھا اور سمجھا،، urdu news
#نیوورلڈآرڈر، ایک اصطلاح استعمال کی جاتی ہے، ہم لوگ اکثر اس پر بحث بھی کرتے ہیں، لیکن اس کا اصل مطلب کم لوگ ہی جان پاتے ہیں
دراصل. #نیوورلڈآرڈر ہی اصل وجہ ہے کہ یہودی پاکستان کے پیچھے 70 سال سے لگے ہوئے ہیں، کہ کچھ بھی لے لو، لیکن اسرائیل کی ریاست کو تسلیم کر لو،
#نیوورلڈآرڈر____ایک ایسا نظریہ ہے. جو کہ ایک مذہب ہے،، جس میں حاکمیت صرف دجال کی ہے اور یہودی جو چاہیں وہ ہی ہوگا
#نیوورلڈآرڈر __کے تحت دنیا کے ہر ملک کو دجال کے تابع ہونا ہوگا، اور ہر ملک کو اپنے آئین اور مذہب سے دستبردار ہونا ہوگا، ساری دنیا کا ایک ہی مذہب پر اتفاق ہوگا اور بدلے میں آپ دجالی خزانوں کے مالک ہونگے،، لیکن،، کرنا وہ کچھ ہوگا جو دجال اور اس کے چَیلوں کی مرضی ہوگی.
اب سوال یہ ہے؟؟؟ کہ پاکستان کیلئے اسرائیل کو تسلیم کرنا کیوں ناممکن ہے.؟؟؟
information
جواب ذرا توجہ سے پڑھئے گا..!!!!
اسرائیل کی ریاست____وہ ریاست ہے،، جس سے احادیث مبارکہ کے مطابق مسلمانوں کی آخری جنگ ہوگی،، اس جنگ کے لئے وہ مجاہدین اور فوجیں جائیں گی..... جو مشرق میں ہندستان کو فتح کر چکی ہوں گی،، یہاں سے یہ فوجیں حضرت عیسٰی علیہ السلام کی مدد کے لئے روانہ ہونگی
حدیثِ نبوی کا مفہوم کچھ اس طرح ہے کہ ان کے پاس بہترین ہتھیار ہونگے اور ان کے شہسواروں کی تعریف بھی فرمائی گئی ہے
مشرق میں بہترین ہتھیاروں اور بہترین افواج والا مسلمان ملک کونسا ہے.؟ یہ بتانے کی ضرورت نہیں ہے
ہمارے ناقص علم کے مطابق حضور اکرم صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم کا اشارہء شہسوار،، پائیلٹس اور جہازوں کی طرف،، یا پھر مسلمانوں کے زیرِاستعمال، ٹینکوں،، میزائلوں،،یا پھر گاڑیوں کے متعلق ہو سکتا ہے (وﷲ اعلم)
آپ صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا کہ مجھے ھِند سے ٹھنڈی ہوا آتی ہے
بقولِ اقبال.
مِیرِ عَرب کو آئی ٹھنڈی ہوا جہاں سے
میرا وطن وہی ہے میرا وطن وہی ہے.

ھِند میں کونسا ملک اسلام کے نام پر اور
ﷲ تعالیٰ کے نبی حضرت محمد صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم کی دعا سے وجود میں آیا،، اور کن کن عظیم ہستیوں نے اس ملک کے قیام میں کردار ادا کیا یہ بھی بتانے کی ضرورت نہیں ہے..

ایک بار فرض کر لیں.. کہ پاکستان... اسرائیل کو بطورِ ریاست تسلیم کرلیتا ہے.. تو پھر جھگڑا کس بات کا ہے... کیا ہمارے مقتدر حلقوں میں بیٹھے لوگ یہ نہیں جانتے کہ پاکستان میں ہونیوالے ہر فساد کے پیچھے کون ہے.؟..
پھر ہمیں اتنی جنگیں کرنے اور امریکہ کو 18 سال سے افغانستان میں برداشت کرنے کی کیا ضرورت تھی.؟
ہمیں ایٹم بم بنانے کی کیا ضرورت تھی.؟
کیا ضرورت تھی ہمیں مقدس مقامات کی حفاظت کی قسم لینے کی.؟
کیا ضرورت تھی اتنی فوج کی.؟
.
یہ ساری دنیا تِتر بِتر ہو جائے گی اگر آج اسرائیل کو تسلیم کرنے اعلان کر دیا جائے،، اور پاکستان کے خلاف ہونے والی کسی سازش کا نام و نشان نہیں رہے گا،، دنیا کی ہر نعمت پاکستان کے قدموں میں ہوگی،،،
کیونکہ............... آپ دینِ اسلام سے دستبردار ہوچکے ہونگے،، اور دجال کا راستہ صاف ہو جائے گا....
اگر پاکستان ___اسرائیل __کو تسلیم کرلیتا ہے تو یہودی #نیوورلڈآرڈر __میں کامیاب ہو جائیں گے..
.
صرف پاکستان ہی وہ واحد ملک ہے.. جو ان اسرائیلی یہودیوں کی کارستانیوں کو تسلیم نہیں کرتا...
2030 تک اسرائیل کو ہر حال میں #نیوورلڈآرڈر کو لاگو کرنا ہے اس دوران آپ کو____سب سے زیادہ پاک فوج اور آئی ایس آئی کے خلاف کیا جائے گا،،
کیونکہ #نیوورلڈآرڈر اور دجال کے راستے میں یہ ہی سب سے بڑی رکاوٹ ہے...
یہ ہی وہ ملک،، پاکستان... جو اسرائیل کے خلاف اقوام متحدہ میں قرارداد پیش کرتا ہے اور اسرائیل کو آنکھ دکھاتا ہے،،
اس لئے،، چند غداروں کے سوا اس ارضِ پاک پاکستان سے مایوس نہ ہونا،،،،
کیونکہ.... یہودی..... عوام.. حکومت ،،اور پاک افواج میں اختلاف کے منتظر ہیں
.
اب یہ آپ پر منحصر ہے کہ آپ کا کتنا ظرف ہے،،
ﷲ تعالی. پاکستان اور افواجِ پاکستان کی حفاظت فرمائے اور دشمن کی گندی نظروں سے محفوظ رکھے..
آمین ثم آمین یا رب العالمین�
پڑھ کر آگےشئیر کریں شُکریہ

Pakistan army zindabad ⁦����⁩⁦����⁩⁦����⁩⁦����⁩⁦����⁩⁦����⁩⁦����⁩⁦����⁩⁦����⁩
#stand_with_Pakistan_Army���������������� urdu news.

qadyanio k sath mamla kya h  (link new artical)
corona ko kaisey phelaya ja raha (new artical)  (liunk)
urdu news israil and pakistan

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے